سرکاری ملازمین کیلئے بری خبر، پنجاب کے کئی ادارے بند کرنے کا فیصلہ

سرکاری ملازمین کیلئے بری خبر، پنجاب کے کئی ادارے بند کرنے کا فیصلہ

حکومت پنجاب نے خسارے میں چلنے والے ادارے ختم اور محکموں کی ری اسٹرکچرنگ کا فیصلہ کرلیا۔

صوبے میں گورننس کے نظام میں انقلابی تبدیلی لانے کے لیے پنجاب حکومت نے صوبائی وزارتوں اور محکموں کی تاریخ کی سب سے بڑی ری اسٹرکچرنگ کا فیصلہ کیا ہے، اس حوالے سے وزیر اعلیٰ مریم نواز نے 14 رکنی خصوصی اعلیٰ سطح کمیٹی قائم کی ہے، جسے 60 دن میں اپنی سفارشات کی تیاری کا ٹاسک دیا گیا ہے۔

اعلیٰ سطح کی خصوصی ری اسٹرکچرنگ کمیٹی کی کنوینر سینئر صوبائی وزیر مریم اورنگزیب ہوں گی جب کہ وزیر خزانہ مجتبیٰ شجاع الرحمٰن اور وزیر قانون بھی کمیٹی کے رکن ہوں گے۔

کمیٹی کی سفارشات پر کارکردگی نہ دکھانے والے اور خسارے میں چلنے والے اداروں کی ڈاؤن سائزنگ کی جائے گی اور ایک ہی جیسا کام کرنے والے ایک سے زائد اداروں کو ختم کردیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے ری اسٹرکچرنگ کے منصوبے کی منظوری دے دی ہے، جس کے نتیجے میں وزارتوں کا حجم کم کرکے سرکاری امور کی انجام دہی میں آسانی پیدا کی جائے گی ۔

ری اسٹرکچرنگ کے ذریعے ایک ہی طرح کے کام کرنے والے اداروں کو ضم کردیا جائے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں